Web Toolbar by Wibiya

Discussion Board » Urdu Adab






   

 

بارشوں کے موسم میں بارشیں تو ہوتی ہیں


......بارشوں کے موسم میں بارشیں تو ہوتی ہیں

.......دل میں بھیگ جانے کی خواہشیں تو ہوتی ہیں

........وصل کے اجالوں کی اوڑھنی میں چھپ کر بھی

.......ہجر کے اندھیروں کی وحشتیں تو ہوتی ہیں

........دوستوں کی آپس میں دشمنی نہیں ہوتی

......دوستوں کی آپس میں رنجشیں تو ہوتی ہیں

......دشمنوں کو بھی ہم نے ساتھ لے کے چلنا ہے

.......زندگی کی راہوں میں سازشیں تو ہوتی ہیں

Comments

    Zaheer Ahmad – Thursday 1st November 2012 at 7:30 pm
یوں تصور میں برستی ہیں پرانی یادیں جیسے برسات میں رم جھم کا سماں ہوتا ھے